سانجھے ٹبر دی نوں مشترکہ از ڈاکٹر رابعہ خرم درانی

سانجھے ٹبر دی نوں
(فیملی کی بہو)
ہڈیاں دا بالنڑ بالدی
(اپنی ہڈیوں سے ایندھن کا کام لیتی ہے)
بوٹیاں دی ہانڈی چاڑھدی
(اپنے ماس پوست سے ہنڈیا چڑھاتی ہے)
ٹبر سارا رج رج کھاوے
(سارا سسرالی خاندان پیٹ بھر کھاتا ہے)
راضی اک وی بندہ نہ ہووے خوش
(اور راضی کوئی ایک فیملی ممبر بھی نہیں ہوتا)
سانجھے ٹبر دی نوں
(مشترکہ خاندان کی بہو)
اندروں اندر مکدی جاندی
(اندر ہی اندر گھلتی رہتی ہے)
اوبڑاں دی دھی
(پرائے خاندان کی بیٹی)
اوبڑ ای رہ جاندی
(پرائی ہی رہ جاتی ہے)
———————————————-
(کبھی دوسرے خاندان کی بیٹی کو بہو بنا کر بھی اس کی تمام عمر کی قربانیوں کے باوجود اسے بیٹی کا درجہ یا کم از کم خاندان کا حصہ تسلیم نہیں کیا جاتا )

You might also like More from author

تبصرے

Loading...